گوہرخان بچی سے زیادتی کے ملزم کو ’جہادی‘ کہنے پر بھارتی اداکارہ پر پھٹ پڑیں

ممبئی: نامور بھارتی اداکارہ گوہر خان بچی سے زیادتی کرنے والے مسلمان شخص کو ’جہادی‘ کہنے پر اداکارہ کوئنا مترا پر پھٹ پڑھیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے علاقے مینڈسور میں 26 جون کو 7 سالہ بچی کے ساتھ ہونےوالی اجتماعی زیادتی کے خلاف ایک بار پھر پورا بھارت اٹھ کھڑا ہوا ہے، جن میں بالی ووڈ اداکاربھی شامل ہیں تاہم کچھ انتہا پسندانہ ذہنیت رکھنے والے اداکار اس معاملے کو بھی مذہب سے جوڑ رہے ہیں، جن میں بالی ووڈ کی ناکام اداکارہ کوئنا مترا بھی شامل ہیں۔

اداکارہ کوئنا مترا خبروں میں رہنے کے لیے اکثرٹوئٹر پرمسلم مخالف بیانات دیتی رہتی ہیں، حال ہی میں انہوں نے 7 سالہ بچی کے ساتھ ہونےوالی زیادتی پر انتہاپسندانہ بیان ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ہے’’کینڈل (موم بتیاں)مارچ کے چیمپئنز نے اب اپنی موم بتیاں یہ دیکھ کر پیچھے کرلی ہیں کہ زیادتی کا شکار ہونے والی بچی ہندو ہے اوراس کے ساتھ زیادتی کرنے والا شخص ’جہادی‘ہے۔‘‘ اس کے ساتھ ہی اداکارہ نےبچی کے ساتھ زیادتی کرنے والوں  میں سے صرف ایک شخص محمد عرفان کی تصویر ٹوئٹ کی ہے۔

کوئنا مترا کی یہ ٹوئٹ دیکھ کراداکارہ گوہر خان پھٹ پڑیں اورجواب دیتے ہوئے کہا ’’میں نہیں جانتی تھی تم مسلمانوں سے اتنی نفرت کرتی ہو، اگر کسی مسلمان شخص نے کوئی گناہ کیا ہے تو وہ’جہادی‘ ہے اور اگر کوئی ہندو گناہ کرے تو وہ صرف ہندو ہے۔‘‘

واضح رہے کہ مینڈسور کے ایک اسکول میں پڑھنے والی سات سالہ بچی 26 جون کو چھٹی کے بعد گھر نہیں لوٹی، بعد ازاں تلاش کرنے پر بچی جھاڑیوں میں ملی جس کی حالت بہت خراب تھی پولیس نے بچی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کرنے پر ایک مسلم شخص محمد عرفان سمیت دوافراد کو گرفتار کرلیا ہے۔

The post گوہرخان بچی سے زیادتی کے ملزم کو ’جہادی‘ کہنے پر بھارتی اداکارہ پر پھٹ پڑیں appeared first on ایکسپریس اردو.